تازہ ترین خبریں
آپ کو مجلس احرار کیسی لگی؟

ریاست مدینہ کے دعویدار عملی اقدامات میں تاحال ناکام ہیں: عبداللطیف خالد چیمہ

فاق المدارس العربیہ پاکستان کے سیکرٹری جنرل مولانا قاری محمد حنیف جالندھری نے کہاہے کہ اسلام کے عملی نفاذ کے بغیر قیام ملک کا مقصد پورا نہیں ہو سکتا اور نہ ہی ہمارے گھمبیر مسائل میں کوئی کمی واقع ہو سکتی ہے،وہ گزشتہ روز احرار کے زونل آفس جامع مسجد چیچہ وطنی میں مجلس احرارا سلام پاکستان کے سیکرٹری جنرل عبداللطیف خالد چیمہ سے ملاقات کے موقع پر اظہار خیال کررہے تھے،اس موقع پر مولانا عبدالمنان،مولانا نجم الحق،قاری محمد قاسم،مولانا منظور احمد،رانا قمرالاسلام،حکیم حافظ محمد قاسم،حافظ محمد سلیم شاہ،قاری محمد سدید اور دیگر حضرات بھی موجود تھے،قاری محمد حنیف جالندھری نے کہاکہ قادیانیوں کی بین الاقوامی سرگرمیوں کے حوالے سے وفاقی وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی سے جو میری ملاقات ہوئی تھی،اس کی روشنی میں حکومت نے کچھ پیش رفت کی ہے،لیکن ریاست مدینہ کے دعویداروں کو عملی اقدامات بھی کرنا ہوں گے، انہوں نے کہاکہ کرتار پور راہداری بہر حال قادیانیوں کو فائدہ پہنچانے کا ایک حیلہ ہے،انہوں نے کہاکہ قادیانی سرگرمیوں کے تدارک کے لیے 1929 ء میں قائم ہونے والی مجلس احرار اسلام آج بھی عقیدہئ ختم نبوت کے تحفظ کے لیے اپنا کردار ادا کررہی ہے،اس جماعت کا شفاف کردار ہماری دینی وقومی تاریخ کا قیمتی اثاثہ ہے،قاری محمد حنیف جالندھری نے کہاکہ نفاذ اسلام کا ٹائٹل اختیار کرکے جو دینی وقومی تحریک چلے گی وہی اپنے اصل اہداف پورے کر سکے گی،انہوں نے کہاکہ دینی مدارس پاکستان کے جغرافیے اور نظریے کے محافظ ہیں، دہشت گردی یا بد امنی سے دینی مدارس کا کوئی واسطہ نہیں، قبل ازیں قاری محمد حنیف جالندھری دفتر احرار پہنچے تو ان کا پر جوش خیر مقدم کیا گیا۔بعد ازاں انہوں نے حکیم حافظ محمد قاسم کے والد گرامی شیخ الحدیث مولانا محمد نذیر کی عیادت کی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Time limit is exhausted. Please reload the CAPTCHA.